سندھ میں جانوروں اور پرندوں کے شکار پر پابندی عائد

کراچی: سندھ میں جانوروں اور پرندوں کے شکار پر پابندی عائد کر دی گئی، مشیر وائلڈ لائف کا کہنا ہے کہ دیگر ممالک سے شکار کے لیے آنے والوں نے رقم ادا نہیں کی۔

تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ کے جنگلی حیات کے مشیر عثمان عالمانی نے کہا ہے کہ محکمہ جنگلات نے شکار پر پابندی عائد کر دی ہے۔

عثمان عالمانی کا کہنا تھا کہ سندھ میں دیگر ممالک سے شکار کے لیے آنے والوں نے رقم ادا نہیں کی، وفاقی حکومت کو رقم کی ادائیگی کے لیے خط لکھیں گے۔

مشیر وائلڈ لائف نے رقم کے تنازعے کے معاملے پر کہا کہ وزارت خارجہ صرف سفارش کرے، شکاریوں کو لائسنس دینا ہمارا اختیار ہے۔

دریں اثنا، وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اپنے اختیارات چیف گیم وارڈن کو سونپ دیے۔

خیال رہے کہ سندھ میں تلور کا شکار مشہور ہے جس کے لیے دیگر ممالک سے شکاری آتے ہیں، سندھ حکومت کے محکمہ جنگلی حیات کا کہنا ہے کہ ان شکاریوں کو لائسنس دینے کا اختیار ان کا ہے، وزارت داخلہ صرف سفارش کرے، لائسنس نہ جاری کرے۔

دوسری طرف بے دریغ شکار کی وجہ سے تلور کی نسل تیزی سے ختم ہو رہی ہے، پاکستان کے میدانوں، صحراؤں اور پہاڑوں میں یہ پردیسی پرندے وسطی ایشیا سے ہجرت کر کے آتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں